14اگست
IMG_3460-0.jpg

دم گھٹکو دم گھٹکو !!!

 

غور سے سُنو !!! 

آج کے دن مجھے کوئی سر و کار نہیں کہ بیان کرتا پھروں کہ پاکستان میں کیا کیا حرامخوریاں ہورہی ہے اور وطن عزیز کن کن معاشرتی ، سماجی ، اقتصادی اور سیاسی مسائل سے دوچار ہے کیونکہ مسائل ہر حال میں انسانوں کے ہی پیدا کردہ ہوتے ہیں۔ 

مثال کے طور پر اگر کوئی کلمہ پڑھتا ہے اور پھر حرامخوری کے لئے کمر باندھتا ہے تو اس میں کلمے کا کیا قصور ؟؟

بھائی میرے !! اس میں کلمے کا کوئی قصور نہیں بلکہ قصور اُس حرامخور کا ہے جو اپنے ذلیل کردار کی وجہ سے کلمےکی تذلیل کرتا ہے۔ 

 لہٰذا زمینی مسائل بہرحال ہر جگہ "حصہ بقدر جثہ" موجود ہوتے ہیں۔

اسلئے پاکستان پر قابض مُٹھی بھر اشرافیہ کو ہرگز "پاکستان" نہ سمجھا جائے بلکہ یہ تو پاکستان کی منہ پر کالک کے مترادف ہیں۔ 

دیکھو بھائی صاحب !!!

میں تو خوشی کے دن خوشی ہی مناتا ہوں اور آج فخر کے ساتھ خوشی کا مقام ہے بلکہ مجھے تو الله تعالٰی کا شکر ادا کرتے ہوئے فخر ہے کہ یوم آزادی کے پُر مسرت دن پر اکثریتی طور پاکستان ہی پاکستان نظر آرہا ہے۔ سوشل میڈیا سے لیکر وطن عزیز کے گلی کوچوں تک ، پبلک ٹرانسپورٹ کی گاڑیوں سے لیکر سرکاری و پرائویٹ عمارتوں تک ہر جگہ سبز ہلالی پرچم کا بہار ہے اور وطن عزیز کے شاہراہیں اور گلی کوچیں سب کےسب سبز ہلالی پرچم کے بہار سے کھل کھلا اُٹھے ہیں۔ 

یہاں تک کے میرے فیس بک فرینڈ لسٹ میں کچھ افغانی بھائیوں نے بھی اپنے چہروں پر پاکستانی پرچم کا پینٹ کیا ہوا ہے سچ پوچئے تو مجھے آج سب سے زیادہ خوشی افغان بھائیوں کے اس اقدام پر سے ملی ہے کیونکہ انہوں قومیت کے فلسفے کو یکسر مسترد کرکے اسلامی بھائی چارے یعنی "اخوت" کو فوقیت دی ہے۔

بہر حال نظریہ پاکستان ہر موڑ پر اپنا رنگ دکھاتا رہےگا کہ پاکستان کا مطلب "لا الہ الالله" ہی ہے۔ 

اور اس کے ساتھ ساتھ خوشی کی بات یہ بھی ہے کہ پاکستان مخالف گنتی کے چند متعصب لوگوں کے ٹولے کو شدید قبض لاحق ہے۔

اور تمام کے تمام "دم گھٹکو دم گھٹکو" کے تکلیف دہ حالت پر ہیں۔ 

ان سے عرض ہے کہ دو چمچ چھلکا اسپغول پانی میں حل کرکے پینے سے کافی حد تک سے آفاقہ ہوجاتاہے۔  

اور آخر میں وطن عزیزسے محبت کرنے والے پاکستانیوں کا تہہ دل سے مشکور ہوں کہ انہوں نے اپنی محب وطنی کا اظہار اس انداز سے کیا کہ ملک دشمن عناصر کی اولادیں بھی جشن آزادی کی خوشیاں منانے میں پیش پیش نظر آنے لگی ہیں ۔۔۔۔!!!

قسم سے ۔۔۔۔۔!!!!!

تحریر : آصف شہزاد (مینگورہ سوات)

Writer | Blogger | Photographer | Pakistani

تبصرے

comments

Share this Story

About Asif Shahzad

Writer | Blogger | Photographer | Pakistani

© Copyright 2015, All Rights Reserved